غزلیں

یہ جو قوم کا راستہ ھے || سحر تاب رومانی

سحر تاب رومانی یہ جو قوم کا راستہ ھے  آخر کون سا راستہ ھے تیرے ...

Read More »

عالمی یوم دوستی کے تناظر میں ایک طرحی غزل : احمد علی برقی اعظمی

Share

Read More »

زُباں کھولیں یا کہہ دیں داستاں ہم بے زُبانی میں >>> ڈاکٹر اندر نردوش

غزل زُباں کھولیں یا کہہ دیں داستاں ہم بے زُبانی میں کہ رکھ لیں را ...

Read More »

میری جانِ جان مرے ہمسفر کوئی بات کر کوئی بات کر : اختر ملک،دبئی

Share

Read More »

ہے نمود سحر ہم نہیں جانتے : وقار زیدی

Share

Read More »

یوں دیکھتے ہیں آئینہ : قاسم شاذ فراہی

Share

Read More »

نا واقف راستوں پر یوں چل پڑا : محمد طیب زاہر

(غزل) نا واقف راستوں پر یوں چل پڑا مسکایا تو ہر ماتھے پہ بل پڑا ...

Read More »

گھٹتے گھٹتے، رفتہ رفتہ، چھٹ ھی جائے گا دھواں : سائرہ بابر

گھٹتے گھٹتے، رفتہ رفتہ، چھٹ ھی جائے گا دھواں سب بدل جائے گا نقشہ، رنگ ...

Read More »

کسی کو ٹوٹ کر چاہنا گناہ ہے ~~~ محمد طیب زاہر

غزل کسی کو ٹوٹ کر چاہنا گناہ ہے چاہتوں کا عذاب پالنا منع ہے قصور ...

Read More »

ذکر ہے کون و مکاں میں آمدِ رمضان کا :احمد علی برقی اعظمی

Share

Read More »
Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com