بہاولپور میں کڈنی سینٹر ۔۔۔کسی نعمت سے کم نہیں

بہاولپور میں کڈنی سینٹر ۔۔۔کسی نعمت سے کم نہیں
تحریر: عابد حسن رضوی
دکھی انسانیت کے دکھوں کا مداوا وزیر اعلیٰ پنجاب کی عوام دوست پالیسیوں کا بنیادی محور ہے جس کا عملی ثبوت مالی سال2017-18میں صحت کے شعبے کے لیے مجموعی طور پر50ارب30کروڑ روپے سے زائدکے ترقیاتی فنڈز مختص کرنا ہے جو پنجاب کی70سالہ تاریخ میں صحت عامہ کے حوالے سے انقلابی اقدام ہے کیونکہ پنجاب حکومت اسے اپنا فرض اولین تصور کرتی ہے کہ لوگوں کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کی جائیں۔ حکومتِ پنجاب بجا طور پر صحت عامہ کی جدید سہولیات مہیا کرنے میں کامیابی سے ہمکنار ہوئی ہے صوبہ کے تمام خطہ میں بنیادی طبی مراکز ،دیہی مراکز ،تحصیل ہیڈکواٹر ہسپتال ڈسٹرکٹ ہسپتال اور دیگر مراکز صحت کو جدید طبی آلات اور دیگر سہولیات سے آرستہ کردیا ہے جہاں معالجین تندہی سے وزیرِاعلی پنجاب محمد شہباز شریف کے ویژن کے مطابق مریضوں کو طبی امداد فراہم کر رہے ہیں ۔ 
بہاولپور کا شمار صوبہ پنجاب کے اہم شہروں میں ہوتا ہے جہاں صحت اور تعلیم کی شاندار سہولیات موجود ہیں۔ بہاولپور وکٹوریہ ہسپتال اور سول ہسپتال میں مریضوں کو جدیدتقاضوں کے مطابق ڈاکڑزر ور پیرا میڈکل سٹاف انسانیت کے جذبہ سے سرشار ہو کر مریضوں کا علاج کرنے میں مصروفِ عمل ہیں۔حکومت پنجاب نے بہاولپور وکٹوریہ ہسپتال کے احاطہ میں جدید طریقہ علاج کی سہولیات بہم پہنچانے کے لئیے کڈنی سینٹر تعمیر کیا ہے اوراسکی تین منزلہ عمارت اسٹیٹ آف دی آرٹ کا شاندار نمونہ ہے ۔جہاں گردہ کے عارضہ میں مبتلا مریضوں کا علاج جدید طبی آلات کی مدد سے کیا جا رہا ہے کڈنی سینٹر میں بہاولپور سے بہاولنگر ،رحیمیار خان ،صادق آباد ،خانیوال ،وہاڑی ،میلسی ،ساہیوال ،پاک پتن ،سندھ اور بلوچستان سے آئے ہوئے گردے کی تکلیف میں مبتلا مریضوں کو علاج معالجہ کی تمام تر سہولیات فراہم کی ہیں۔کڈنی سینٹر کے قیام پر مجموعی طور پر 594.347ملین روپے کے فنڈزاستعمال ہوئے ہیں جن میں سے عمارت کی تعمیر پر214.465ملین روپے اور جدید طبی آلات کی تنصیب کے کاموں پر مجموعی طور پر 379.882ملین روپے خرچ ہوئے ہیں۔
کڈنی سینٹر کے انچارج پروفیسر ڈاکٹر شفقت علی تبسم اپنی ماہر ٹیم کی ہمراہ گردہ کے مریضوں کی دیکھ بھال اور علاج کی سہولیات فراہم کرنے میں اپنی پیشہ ورانہ ذ مہ د اریاں ادا کر رہے ہیں ۔کڈنی سینٹر میں مریضوں اور ان کے لواحقین کی مختلف شبہ جات کے بارے میں رہنمائی کے لئیے معلوماتی بورڈ نصب کیئے گئے ہیں اور گراؤنڈ فلور پر استقبالیہ سیکشن بھی موجود ہے۔کڈنی سینٹر کے گراؤنڈ فلور میں الٹرا ساؤنڈ ، ایکسرے کیمیکل لیب ، فارمیسی ،یوروڈائنامکس سیکشن اور ایڈمن آفس قائم ہے ۔
کڈنی سینٹر کی پہلی منزل پر نیفرالوجی وارڈ موجود ہے جو کہ 40بیڈذ پر مشتمل ہے جب کہ پانچ پرائیویٹ کمرے بھی موجود ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ ہیمو ڈائلاسسز یونٹ موجود ہے جہاں پر 22 ڈائلاسسز مشینیں نصب کی گئی ہیں جن کی مدد سے ڈاکٹر دکھی مریضوں کی خدمتِ خلق کے جذبے سے ڈائلاسسز کررہے ہیں۔
دوسری منزل پر یورالوجی وارڈ قیام کیا گیا ہے جو کہ 80بسترو ں پر مشتمل ہے علاوہ ازیں 10پرائیویٹ رومز بھی موجود ہیں اور ہر کمرے کے باہرمعلوماتی بورڈ پر مریض کا نام اور پتہ درج ہے۔
کڈنی سینٹر بہاولپور کی تیسری منزل پر جدید آپریشن تھیٹر ز،انتہائی نگہداشت یونٹ (ICU) مع چار بیڈزہیں۔ علاوہ ازیں لتھوٹرپسی سیکشن ہے جہاں شعاعوں کی مدد سے مریض کی پتھری توڑی جاتی ہے۔اس کے ساتھ ساتھ اس منزل پر ڈاکٹروں کے لئے کانفرنس روم اور لائبریری موجود ہے ۔
کڈنی سینٹر بہاولپور کو فعال کرنے کے لئے حکومتِ پنجاب محکمہ صحت کی جانب سے ابتدا میں 117اسامیاں دی گئی جن میں سے53گزیٹڈ اور 64نا ن گزیٹڈ تھیں جو کہ پر کرلی گئی ہیں ۔اسامیوں کی کمی کو مدِنظر رکھتے ہوئے وزیرِاعلی پنجاب محمد شہباز شریف نے مزید 421اسامیوں کی منظوری دی جن پر ریکروٹمنٹ کا عمل تیزی سے مکمل کیا جا رہا ہے ۔
اعلیٰ معیا ر اورعصرِ حاضر کے تقاضوں کے مطابق علاج کی سہولیات فراہم کرنے سے ملک کے تین صوبوں (پنجاب، سندھ اور بلوچستان) کے مریضوں نے بھر پور اعتماد اور اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کڈنی سینٹر بہاولپور کو گردہ کے مریضوں کے لیے ایک نعمت قرار دیا ہے ۔کڈنی سینٹر کی خوبصورت عمارت مکمل طور پر ایئر کنڈیشنڈ ہے مریضوں اور لواحقین کی سہولت کے لیے لفٹ نصب ہے۔
شماریات کے مطابق امسال 30جون تک 38352مریض اوپی ڈی میں آئے جن میں سے 11254مریضوں کی ڈائلاسسز کی گئی 3019مریض یورالوجی وارڈ میں480 مریض نیفرالوجی وارڈ میں داخل کئے گئے اور اس دورا ن 2626 مریضوں کی سرجری کی گئی اور 380مریض کو لتھوٹرپسی کی مدد سے علاج کیا گیا جب کہ جون 2017تک کڈنی سینٹر میں آئے ہوئے3492 مریضوں کے ایکسرے ،10271مریضوں کی لیبارٹری کے ذریعہ تشخیص اور 5397الٹراساؤنڈ کئے گئے ہیں ۔
کڈنی سینٹر بہاولپور میں مریضوں کو اعلی معیار کی طبی سہولیات فراہم کرنے کے حوالے سے اسکی مقبولیت میں اضافہ ہوا ہے جس کے باعث مریض اور لواحقین دور دراز کا سفر طے کر کے علاج کی سہولیات سے مستفید ہو رہے ہیں۔
کڈنی سینٹر بہاولپور میں روزانہ بیرون مریض شعبہ (OPD)میں 400سے 500تک مریض تشخیص اور علاج معالجہ کے لئے آتے ہیں ۔ اس طرح روزانہ 12 سے14میجر آپریشن اور 12 سے 15مائنر پروسیجر کئے جار ہے ہیں۔ واضح رہے کہ مریضوں کو حکومتِ پنجاب کی جانب سے ادویات اور دیگر سہولیات مفت فراہم کی جا رہی ہیں ۔کڈنی سینٹر میں صفائی کے شاندار انتظامات ،پینے کے صاف پانی اور ادویات کی فراہمی کو یقینی بنایا جاتا ہے ۔اس ادارہ کو کامیاب اور مریضوں کے لئے فائدہ مند بنانے کے لئے محکمہ صحت کے اعلی افسران ، کمشنربہاولپور ڈویژن اور ڈپٹی کمشنروقتاََفوقتاََ دورہ کر کے ہیلتھ کی سہولیات کا جائزہ لیتے ہیں۔
حکومتِ پنجاب نے گردہ کے مریضوں کے علاج کے لئے ایک شاندار اور اعلی طبی سہولیات سے مزین کڈنی سینٹر بہاولپور میں قائم کر کے فنکشنل کردیا ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ اس کے معیار کو برقرار رکھا جائے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com