تیلگو زبان کے ساتھ ساتھ اردو کی ترقی بھی کی جائے گی

تیلگو زبان کے ساتھ ساتھ اردو کی ترقی بھی کی جائے گی
آندھرا پردیش سرواشکشا ابھیان کے ڈائریکٹر جناب سرینیواس

رپورٹ۔امراوتی آندھراپردیش
سوچھ بھارت سوچھ ودیالیہ ویژن کے تحت آندھراپردیش سروسکشھا ابھیان کو سال 2016-17کے لئے دوسرے مقام پر سوچھ بھارت سوچھ ودیالیہ ایوارڈ دیا گیا ہے۔یکم ستمبر 2017کو نئی دہلی میں وزیر انسانی فروغ وسائل برائے فلاح وبہبودجناب پرکاش جاوڈیکر کے ہاتھوں یہ ایوارڈ آندھراپردیش سروا شکشا ابھیان ( SSA) پراجکٹ دائریکٹر جناب۔جی۔سرینیواس، آئی اے یس کو دیاگیا۔
اس سوچھ ودیالیہ پرسکار کے ضمن میں بتاریخ13اکٹوبر ہوٹل میٹروپالٹن وجئے واڈہ میں ایک اعزازی جلسہ منعقد کیاگیا۔بحیثیت صدر جلسہ جناب۔جی۔سرینواس آئی اے یس صاحب رہے۔ نظامت کے فرائض جناب ، ڈی مدھوسودھن صاحب اسسٹنٹ اسٹیٹ پروجیکٹ ڈائریکٹر نے بحسن خوبی انجام دیا۔ محترمہ پریانکا، میڈکل کنسلٹنٹ یس یس اے نے تمام سامعین کرام کا پرتباک استقبال کیا۔بعد از جناب عبدالغنی ، اسٹیٹ پیڈاگاجی اسسٹنٹ اردو نے ہاشمؔ کڈپوی کے تہنیت نامہ سے جلسہ کا آغاز کیا۔
نظامت کے فرائض ادا کرتے ہوئے جناب ڈی مدھوسودھن صاحب نے جناب سرینیواس صاحب کی سوانح پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ موصوف کی پیدایش سنہ 1970کے اثنا میں ایک پسماندہ طبقے سے تعلق رکھنے والے گھرانے میں ہوئی۔جن کے والدین مرحوم پنچلّیا اور محترمہ لکشمّما ہیں۔بچپن ہی سے سماج میں درپیش بھید بھاؤ، ذاتی امتیازات، اونچ نیچ جیسے مسائل سے دو چار رہے۔ان تمام حالت کا نہایت حمیت اور جارحیت و بردباری سے سامنا کرتے ہوئے �آگے بڑھنے کی کوشش کرتے رہے۔ایک وقت ایسا بھی آیا کہ مفلسی نے درمیان میں ہی آپ کے انٹرمیڈیٹ کی تعلیم کو ترک کرنے اور مزدوری کرنے پر مجبورکردیا۔ تعلیم کو جاری رکھتے ہوئے گریجویشن کو مکمل کیا۔پھر 2005 کے اثنا میں انڈین سیویل امتحانات دے کر کامیاب رہے، اور آپکو اترپریش میں سیول سرویسس کے تحت ملازمت پر فائز کیاگیا۔اس طرح ناظم جلسہ نے صاحب اعزاز سوچھ پرسکار کے ماضی سے وابستہ حالات پر شرکا کو روشناس کروایا۔
جناب عبدالغنی کونینؔ اسٹیٹ پیڈاگوجی اسسٹنٹ نے صاحب اعزاز کے خدمات پر طائرانہ روشنی ڈالتے ہوئے بتلایا کہ2014کے اثنا میں جب متحدہ آندھراپردیش تقسیم ہوا ، تب سے لے کر نئی ریاست آندھرا کی صورت حال بہت بدتر اور خستہ رہی ہے۔مالی سہولیات، آمدنی اور نظم ونسق سے دست بردار ہوکر حیدرآباد سے امراوتی تک منتقل ہونا اور ریاست کی از سر نو تشکیل میں تمام شعبہ جات، افسران، اور شہریوں کے لئے اک مشکل امر رہا ۔تب حیدرآباد سے اک کے بعد دیگر محکمہ جات امراوتی منتقل کردئے گئے۔اسی وقت سروسکشھا ابھیان کے ریاستی دفتر کو امراوتی منتقل کردیا گیا۔عین اسی وقت جناب سرینواس صاحب کا بحیثیت اسٹیٹ پراجکٹ ڈائرکٹر اتر پردیش سے آندھراپردیش کو پوسٹنگ دی گئی۔ایسے حالات میں شعبہ تعلیم سے وابستہ مسائل کو حل کرنا اور معیاری تعلیم کے حصول میں حدف شدہ نشانہ پار کرنا سوئی کی نوک پر دہلی کا قطب مینار تعمیر کئے جانے کے مترادف تھا۔آپ کی آمد کے بعد بالخصوص لڑکیوں کی تعلیم، کستوری با گاندھی ودیالیہ اسکول، مدرسہ ایجوکیشن، بڑی رونم تیرچوکندام، سوچھ پاٹھاشالا جیسے نت نئے سرگرمیوں کے ذریعہ معیاری تعلیم اور صد فیصد خواندگی اور ہریتا ندھرا پردیش کی کامیابی میں آپ کمال کے جوہر دکھائے ہیں۔ساتھ ساتھ تمام سرکاری، خانگی، خود مختار تیلگو مع اردو اسکول میں پینے کے پانی کی وافر سہولیات، معقول اور صحت مند طہارت خانے، بیت الخلایءں کی تعمیر کرتے ہوئے ملک گیر سطح پر 100فیصد مقاصد کو حاصل کیا۔
جناب عبدالغنی نے مزید شرکا کو بتلایا کہ سوچھ پرسکار اعزاز کے ضمن میں ریاست کے وزیر اعلی عزت مآب سری۔ناراچندرا بابو نایئڈو جی نے سرینواس صاحب کی آج ہی سکریٹریٹ میں تعریف و تحسین کرتے ہوئے شال پوشی سے خدمات کو سراہا ہے۔
ساتھ ہی جناب عبدالغنی کا تقرر سروسکشھا ابھیان جو اردو زبان کی فلاح اور بقا کے لئے کیا گیا ہے۔آپ نے بتلایا کہ ان چار مہینوں کے مختصر سے وقفہ میں اردو زبان کے لئے مشتثنی ورکشاپ کا انعقاد، اساتذہ کے لئے تربیتی پروگرام، اردو تربیتی کتابچے، اردو نصابی کیلنڈر کا ترجمہ۔مدرسہ ٹریننگ ماڈیول وغیرہ کی سہولیات کو بہم پہنچانے میں سرینواس صاحب نے اہم رول ادا کیاہے۔اردو زبان کے تیءں آپ کی اس محبت اوررواداری کے لئے ریاست کے تمام اردو اساتذہ شکر گذار ہیں اور رہیں گے۔بعد از جناب ہاشم ؔ کڈپوی کے تہنیت نامہ کو عبدالغنی نے شال پوشی کے ذریعہ سرینواس صاحب کوپیش کیا۔ساتھ ہی جناب احمد نثارؔ کے تلگو زبان میں تہنیت نامہ کو ڈاکٹر پنچلیّا اور محترمہ گیتا یس یس اے نے اپنی جانب سے پیش کیا۔

آخر میں صدر جلسہ، صاحب اعزاز، سوچھ پرسکار سرینواس صاحب نے کہا کہ وہ تلگو زبان کے ساتھ ساتھ اردو زبان کی ترقی و ترویج میں بروقت وبرمحل اپنے خدمات کو بروئے کار لے آئیں گے۔اس پرمسرت موقع پر. اسٹیٹ پروجیکٹ ڈائریکٹر صاحب نے سروا شکشا ابھیان کے تمام کارندوں کے لئے بونس اور وظائف کا اعلان کیا۔
شعبہ تعلیم میں جوہر دکھائے اس قدر
سرو ابھیان کا نگینہ ہیں سرینواس صاحب

****
احمد نثارؔ 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com