ماہر تعلیم،UNESCO دوحہ آفس،ڈاکٹر فریال خان۔۔۔۔۔تعارف و لیکچر

ماہر تعلیم،UNESCO دوحہ آفس،ڈاکٹر فریال خان۔۔۔۔۔تعارف و لیکچر
تحریر؛مراد علی شاہد دوحہ قطر
ڈاکٹر فریال خان بطور پروگرام سپیشلسٹ برائے ایجوکیشن دوحہ آفس اپنے فرائض منصبی سر انجام دے رہی ہیں۔وہ خلیجی ریاستوں کے ساتھ ساتھ یمن کی تعلیم۔تعلیمی حالت،معاشی،معاشرتی،اور صحت عامہ کے مسائل کے بارے میں پالیسی سازی اور مذکورہ مسائل کے حل کیلئے تجاویز پر بھی کام کر رہی ہیں۔ڈاکٹر فریال خان کا تعلق پاکستان کے دور افتادہ شہر عیسیٰ خیل سے ہے۔تاہم تعلیمی زندگی پنجاب یونیورسٹی لاہور اور ہاورڈ یونیورسٹی امریکہ میں گزاری۔پنجاب یونیورسٹی اور ہاورڈ یونیورسٹی سے ایجوکیشن میں ماسٹر ڈگریاں حاصل کرنے کے بعدہاورڈ یونیورسٹی ہی سے Education Administration ,Planning and Social Policy میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی۔ڈاکٹر خان UNESCO پیرس ہیڈکوارٹر میں 15سال اپنی خدمات سر انجام دینے کے بعد آجکل دوحہ آفس میں اپنی سروسز دے رہی ہیں۔علاوہ ازیں UNO کے زیر سایہ کام کرتے ہوئے وہ ایشیا،لاطینی امریکہ،افریقہ،جزائر غرب الہند اور عرب ممالک میں بطور ماہر تعلیم و تحقیق جانی اور پہچانی جاتی ہیں۔علاوہ ازیں ہاورڈگریجو ایٹ سکول میں داخلہ جات کی سفیر اور میک لین نیشنل کونسل ہاورڈ یونیورسٹی امریکہ کی بورڈ ممبر بھی ہیں۔
بطور خاص انہیں پاک شمع کالج میں ایک تربیتی لیکچر کے لئے مدعو فرمایا گیا تاکہ اساتذہ کرام کو اس قابل بنایا جائے کہ وہ تیزی سے بدلتے حالات اور ٹیکنالوجی کی نت نئی اختراعات کا مقابلہ کیسے کر سکیں اور ان تمام وسائل و مسائل سے واقفیت اور حل کو کیسے ممکن بنا سکیں۔مزید برآں انہوں نے sustainable development goals(SGD) کے بارے میں مکمل تفصیل سے آگاہی دیتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کا خیال ہے کہ وہ اپنے وضع کردہ تعلیمی مقاصدکے حصول کو 2030 تک ممکن بنالے گا۔تاکہ ترقی پزیر ممالک میں جو 17 مقاصد یونیسکو نے وضع کئے ہیں ان کو عملی شکل دی جائے۔جیسے کہ غربت کا خاتمہ،بھوک کا مٹانا،اچھی صحت،معیاری تعلیم،امتیازی سلوک کی حوصلہ شکنی،صاف پانی،انرجی،معاشی بہتری،انفراسٹرکچر،مصارف اور پہداوار میں بیلنس اور امن و انصاف کے اداروں کو مظبوط کرنا۔یہ وہ اہداف ہیں جن پر قابو پا کر ہم تعلیم اور لوگوں کا معیار زندگی بہتر بنا سکتے ہیں ۔کیونکہ تمام مسائل آجکل ایک دوسرے سے جڑے ہوئے ہیں۔اور ان تمام مسائل کا حل تب ممکن ہو سکتا ہے جب تک ہم تمام لوگوں کو بلا امتیاز معیاری تعلیم کے حصول کے قابل نا بنائے۔
لیکچر کے اختتام پر،پرنسپل نبیلہ کوکب نے مہمان خصوصی کا شکریہ ادا کیا اور خاص طور پہ عدیل اکبر،پاک آرٹس سوسائٹی کا جنہوں نے ادارہ کو ڈاکٹر فریال جیسی شخصیت سے متعارف کروایا۔انہوں نے اساتذہ کرام کو بھی تلقین کی کہ ایسے مواقعوں سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھائیں اور تعلیمی معیار کی بہتری میں ادارہ کے شانہ بہ شانہ کام کریں۔سٹیج سیکرٹری کے فرائض مظفر حسین صدر شعبہ انگریزی نے انجام دئے۔اور مہمان خصوصی کی خدمت میں کوآرڈینیٹر اظہر حیات نے کالج سوونئیر پیش کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com